محکمہ بجلی کے تمام ملازمین کی مفت بجلی کی سہولت ختم

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے محکمہ بجلی کے تمام ملازمین کی مفت بجلی کی سہولت ختم کر دی ۔نورعالم خان کی صدارت میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ چیئرمین پی اے سی نے اجلاس میں کہا کہ ملازمین کے بچوں کو نوکریوں میں ترجیح دی جائے۔
جب کہ سیکرٹری توانائی نے کہا کہ ملازمین کے مفت یونٹس بند کر دیئے تو بے چینی پھیل جائے گی۔جتنے ملازمین کو مفت یونٹ ملتے ہیں وہ ان کی تنخواہ میں ڈال دیئے جائیں۔
چیئرمین پی اے سی نے کہا کہ ملازمین کو مفت یونٹس کی رقم ان کی تنخواہ میں ڈال دی جائے۔اس طرح کا فیصلہ ایسی صورتحال میں کیا جا رہا ہے جب بجلی کی قیمت میں بےتحاشا اضافہ ہو چکا ہے۔بجلی کی بچت کے لیے حکومت مختلف اقدامات بھی کر رہی ہے۔بعد ازاں پی اےسی نےمحکمہ بجلی کےتمام ملازمین کی مفت بجلی کی سہولت ختم کر کے یونٹس تنخواہ میں ڈالنے کا حکم دیدیا
پاور ڈویژن ذرائع کے مطابق گریڈ 10 تک کے ملازمین کو ماہانہ 200 یونٹ فری ملتا ہے، گریڈ 11 سے 15 تک کے ملازمین کو ماہانہ 300 یونٹ فری ملتا ہے۔
بجلی محکمہ کے گریڈ 1 سے 4 کے ملازم کو ماہانہ 100 یونٹ فری ملتا ہے۔
گریڈ 16 سے 17 کے ملازمین کو ماہانہ 450یونٹ فری ملتا ہے۔
گریڈ 18 کے افسران کو ماہانہ 600 یونٹ فری ملتا ہے۔
گریڈ 19 کے افسران کو ماہانہ 800 یونٹ فری ملتا ہے۔
گریڈ 20 سے 22 کے افسران کو ماہانہ 1300 یونٹ فری ملتا ہے ۔
بجلی کے محکموں کے ملازمین کو سالانہ 39 کروڑ 10 لاکھ یونٹ فری ملتا ہے۔
بجلی تقسیم کار اور پیداواری اداروں کے ملازمین سالانہ 5 ارب 25 کروڑ تک کی بجلی مفت استعمال کرتے ہیں ۔

Views= (119)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

اہم خبریں/ تازہ ترین